22 Oct, 2017 | 1 Safar, 1439 AH

Assalamu Alaikum, Hazrat mera sawal Capsules se mutaliq hai. Mujhe aik infection ho gaya hai jis ke ilaj ke liye Doctor ne capsules prescribed kiye hai. Laken capsules me gelatin hai. Ic ke ilaj ke liye aur koi dosri medicine locally available nai hai. Dosry mulk me shaid ho. Laken mangwana mushkil hai. Infection ki taklif bhi hai. Kiya aysi surat mein capsules jis ke outer shell me gelatin ho woh istimal kiye ja sakty hein?

السلام علیکم!

اگر کوئی ڈاکٹر کسی بیمار کا علاج ایسے کیپسول   کھانے کا کہتا ہے کہ جس کے اندر  جیلٹن  ڈالا گیا ہے۔  اس دوائی کے علاوہ اور کوئی  علاج نہ ہو اس  مرض کا ، یا دوسری دوائی اس ملک میں نہ ملتی ہو،  ہوسکتا ہے ، دوسرے ملک میں ملتی ہے، لین دوسرے ملک  میں تحقیق کرنا ور منگوانا مشکل کام  ہے، تو کیا ایسی صورت میں وہ کیپسول کھا لینے چاہیے یا نہیں جبکہ بیماری کا حملہ بہت شدت کے ساتھ ہو؟

الجواب حامدا ومصلیا

اگر کوئی ماہر ڈاکٹر کسی مریض کے لیے ایسی دواکھانا تجویز کردے ، جو حرام یا حلال  غیر مذبوح(مردار) جانوروں سے حاصل شدہ جیلٹن  سے  تیار  کی  گئی  ہو،  اور اس دوا کے علاوہ دوسری دوا سے علاج   نہ ہوسکتا ہو،  تو ایسی صورت میں اس دوا کواستعمال کرنے کی گنجائش ہوتی ہے، لہذا صورت مسؤلہ میں بطور علاج کے  ایسے کیپسول   کھانے کی گنجائش ہے، جس کے اندر  جیلٹن  ڈالا گیا ہے،  بشرطیکہ وہ ڈاکٹر ماہر ہو اور اس دوا کے علاوہ اس ملک میں کسی اور دوا سے علاج نہ ہوسکتا ہو۔  (ماخذہ: درس ترمذی : ۱ / ۲۹۲)

 واللہ اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق  غفراللہ لہ

دارالافتاء ، معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

۱۵؍شعبان المعظم؍۱۴۳۸ھ

۱۲؍مئی؍۲۰۱۷ء