22 Oct, 2017 | 1 Safar, 1439 AH

assalam o alikum .... 1)hazrat mera sawal ye ha k kea jis bed par hum soty han us par beth kr quran ki dekh kr tilawat kr sakty han,,, ager kar skty han tu kea ager banda subha uthy jb k us k biwi bachy bed par so rahy hun tu us bed par wo un ki mojoudgi ma beth kr parh sakta ha k nae??? 2) hazrat muraqaba ma dil lagany ka koi tareeqa bataen??

  السلام علیکم!

1-  میرا ایک سوال یہ ہے کہ جس بیڈ پر ہم سوتے ہیں، اس پر بیٹھ کر دیکھ کر قرآن کریم کی تلاوت کرسکتے ہیں؟ اگر کرسکتا ہے تو کیا اگر بندہ صبح صبح اٹھے ، جبکہ اس کے بیوی بچے بیڈ پر سورہے ہوں، تو اس  بیڈ پر ان کی موجودگی میں  بیٹھ کر پڑھ سکتے ہیں یا نہیں؟

2-   حضرت ! مراقبہ میں دل لگانے کا کوئی طریقہ بتلادیں۔

الجواب حامدا ومصلیا

1-  بستر (بیڈ) پر بیٹھ کر تلاوت کرسکتے ہیں، بشرطیکہ بستر پاک ہو۔ اگر گھر والوں کی نیند اور آرام  میں خلل  واقع نہ ہو، توان کی موجودگی میں آہستہ آواز سے تلاوت کرسکتے ہیں، ورنہ ان سے الگ ایسی جگہ میں  تلاوت کریں جہاں کسی کے آرام میں خلل واقع نہ ہو۔

2- www.askmahad.com پر فقہی نوعیت کے سوالات کے جوابات دیئے جاتے ہیں۔ تصوف اور مراقبہ کے متعلق سوالات www.tasawwuf.orgپر رجوع کریں۔ جزاک اللہ

فی حاشية ابن عابدين - (ج 1 / ص 660)

 وفي حاشية الحموي عن الإمام الشعراني أجمع العلماء سلفا وخلفا على استحباب ذكر الجماعة في المساجد وغيرها  إلا أن يشوش جهرهم على نائم.

واللہ اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق  غفراللہ لہ

دارالافتاء ،معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

۲۰؍محرم الحرام؍۱۴۳۸ھ

۲۲؍اکتوبر ؍۲۰۱۶ء