22 Oct, 2017 | 1 Safar, 1439 AH

Aoa. Meray husband ki aik galat peer sey bayat thy.. Us peer ney meray husband ki bayat khtam krdy... Us k baad sey meray husband bhht preshan huay and khwaab pe bhht believe krtay hen...kabi btatay hen k aglay month ye ye kaam khraab hogaa..ye(husband k father) fout hojayngay...hm (miyan bivi)sath nhi reh skengay...aur men(husband)kaafir hojaongaa etc etc.... Tu inhun ney mje aik din pehlay kaha k : "ab tu bs kal kaa din reh gyaa hey...(matlab ye thaa k hm dono ki alahdgy k liay)...mn ney khwab mn dekhaa hey k..." Is k agay mn ney phone cut krdyaa... Ab mje btayn k hm myaan bv mn alaihdgy hogye... Agr hogye tu talaqe baayn yaa rajii..?

میر ا شوہر ایک غلط پیر سے  بیعت تھے، اب ان کی بیعت ان سے ٹوٹ گئی ہے، جس کی وجہ سے وہ بہت پریشان ہیں۔ وہ خوابوں پر بہت ہی یقین کرتے ہیں، کبھی کہتے ہیں کہ  فلاں فلاں کام خراب ہوگا، کبھی کہتے ہیں فلاں مرجائے گا۔ اور کبھی کہتے ہیں  میرے اور تیرے درمیان علیحدگی ہوجائے گی، اور ایک مرتبہ کہا کہ  اب توبس ایک دن رہ گیا ہے۔( مطلب یہ تھا کہ تیری میری علیحدگی میں ایک دن باقی رہ گیا) میں نے آگے سے فون بند کردیا۔ اب مجھے بتائیں  کہ اس سے طلاق ہوئی ہے یا نہیں؟

الجواب حامدا ومصلیا

شوہر کے الفاظ‘‘ توبس ایک دن رہ گیا ہے’’ اس سے کوئی طلاق واقع نہیں ہوئی۔ 

 واللہ اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق  غفراللہ لہ

دارالافتاء ،معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

۲۹؍رجب المرجب؍۱۴۳۸ھ

۲۷؍اپریل؍۲۰۱۷ء