17 Nov, 2017 | 27 Safar, 1439 AH

Mufti sahib miswak karnay kay baad os ko kistharah say rakay???..brush wala side ooper ho ya neechay??

السلام علیکم!

مسواک کرنے کے بعد اس کوکس طرح رکھا جائے؟ برش والا حصہ  سیدھا اوپر ہو یا نیچے؟

الجواب حامدا ومصلیا

نظافت ( صفائی ستھرائی اور پاکیزگی ) کی وجہ سے مسواک کو کھڑی  کرکے کسی اونچی جگہ پر رکھی جائے، اور زمین پر لیٹا کر نہ رکھے، تاکہ مسواک کا برش خراب نہ ہو ، اور جو حصہ دانتوں میں استعمال ہوتا ہے، وہ اوپر ہو۔

یہ بھی واضح رہے کہ یہ حکم  نظافت ( صفائی ستھرائی اور پاکیزگی ) کی وجہ سےہے، شرعاً مسواک کسی طرح بھی رکھ سکتے ہیں۔ اس میں شرعاً کوئی ممانعت نہیں ہے۔

 

فی حاشية ابن عابدين (1/ 115)

قوله ( ولا يضعه الخ ) أي لا يلقيه عرضا بل ينصبه طولا . قال القهستاني وموضع سواكه من أذنه موضع القلم من أذن الكاتب وأسوكة أصحابه خلف آذانهم كما قال الحكيم الترمذي وكان بعضهم يضعه في طي عمامته ا هـ  قوله ( وإلا فخطر الجنون ) فإنه يروي عن سعيد بن جبير قال من وضع سواكه بالأرض فجن من ذلك فلا يلومن إلا نفسه.

واللہ اعلم بالصواب

      احقرمحمد ابوبکر صدیق  غفراللہ لہ

  دارالافتاء ، معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

۳۰؍ذیقعدہ؍۱۴۳۸ھ

  ۲۳؍اگست؍۲۰۱۷ء